معالجاتی شہد(Honey therapy)

زمرے: مقالات و پژوهش ها

آج کی دنیا میں موجود معالجہ کے طریقے تین ہیں:
1. گولیاں، کیپسول، سرنج، اور شیاف(Tablets, capsules, syringes, suppositories) جیسے رائج ددواؤں سے رائج علاج تین قسم میں تقسیم ہوتا ہے:
الف. موثر مادہ شیمیایی اور ترکیبی مواد سے تیار کیا گیا ہے.
ب. موثر مادہ ، شیمیایی محصولات اور جڑی بوٹیوں کے عرق سے مخلوط معجون ہے.
ج. موثر مادہ ، جڑی بوٹیوں کا عصارہ ہے جو جڑی بوٹیوں سے شیمیایی محصول کے ہمراہ ہے .
2. گیاہی دواؤں سے علاج جو گل گیا ،جڑ، تنہ ،میوہ اور خشک یا تر دانہ کی صورت میں خشک یا گیاہ کا نچوڑ ،گیاہ کا سیال عصارہ یا قطرہ قطرہ کر کے آمادہ ہوا ہو.
3. شہد سے مخلوط عصارہ گیاہ سے علاج ۔اگر شہد کا موثر مادہ طبیعی طور پر جسم میں جائے تو سایئڈ ایفیکٹ کے  بغیر بہترین دوا ہوگی ۔معالجاتی شہد شفا بخش اور سایئڈ ایفیکٹ کے بغیر ہے ۔ دوا کا پہلی اور دوسری روشوں کے ساتھ علاج کرنے کے لئے معین مدت تک استعمال کرنا چاہیئے ؛ضمنی طور پر 20 ٪ سے 30 ٪ سایئڈ ایفیکٹ ہوگا ۔لیکن تیسری روش میں دوا کے استعمال کی مدت کی جانب توجہ رکھنا ضروری نہیں ہے کیونکہ عصارہ گیاہ سے حاصل شدہ شہد کا استعمال معدہ کے لئے نقصان دہ نہیں ہے اور اس کا کوئی سایئڈ ایفیکٹ بھی نہیں ہے.

رای دیجیئے

آپ مہمان کے عنوان سے اپنی رای ارسال کررہے ہیں

ارتباطی طریقے

دفتر قم کاپتہ:ایران - قم - بلوار محمد امین-بین کوچه 11و13
رابطہ نمبر: 00982532930344 - 00989127553030

  • دانشنامه شفاسنتر
  • فروشگاه عسل حکیم
  • جامعة علوم القرآن